452

اسرائیل کے کشمیری مسلمانوں کے ساتھ روابط

اسرائیل کشمیری مسلمانوں کے ساتھ ہر قسم کے روابط رکھنے کو تیار ہے اس تعلق کو آگے بڑھانے کے لیے “انڈو اسرائیل فرینڈشپ سوسائٹی” کا وفد کشمیر کے دورے پر گیا اور اس وفد کی سربراہی “انڈو اسرائیل فرینڈشپ سوسائٹی ” کے چیئرمین آصف اقبال نے کی۔

آصف اقبال اس سے پہلے بھی انڈین مسلمانوں کا وفد اسرائیل لے جا چکا ہے۔ آصف اقبال انڈین مسلمانوں اور اسرائیل کے درمیان روابط کو تیز تر لانے کے لیے انتھک محنت کررہے ہیں۔ انہوں نے کشمیر میں ایک لوکل اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ:

“اسرائیل کے پاس ترقی اور ٹیکنالاجی پر مبنی بے پناہ وسائل ہیں اور ان کی کوشش ہے کہ کشمیری نوجوان ان وسائل سے اپنے مستقبل کو روشن بنائيں اور اسرائیل کشمیری نوجوانوں کی ہر ممکن مدد کرنے کو ہم وقت تیار ہے”۔

آصف اقبال گرشتہ برس تب سے سرخیوں میں آئے جب ہندوستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ انہوں نے اسرائیلی سفارتخانہ میں کاروباری مسلمانوں کے لیے افطار ڈنر کا بندوبست کیا تھا۔

آصف اقبال ہندوستانی اور بالخصوصی طور پر کشمیری مسلمانوں کے لیے اسرائیل کے اندر اور اسرائیل کےباہر کشمیر میں بہتر مواقع پیدا کرنے کے لیے جدوجہد کررہے ہیں۔

آصف اقبال کے “پاکستان اسرائیل الائنس “کے بانی نور ڈاہری کے ساتھ بھی روابط قائم ہوچکے ہیں۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں